3برسوں کے دوران مقبوضہ کشمیر میں 49 بھارتی فوجی اہلکار ہلاک ہوئے

نئی دہلی (ثناء نیوز) بھارتی وزارت دفاع کے مطابق جموں کشمیر میں گزشتہ تین برسوں کے عرصے میں عسکریت مخالف کارروائیوں کے دوران 49بھارتی فوجی اہلکار ہلاک ہوئے ۔ بھارتی حکومت نے یہ دعوی بھی کیا ہے کہ ممبئی حملوں کے سلسلے میں بھارت کو مطلوب جماعت الدعو کے سربراہ حافظ محمد سعید نے ماضی قریب میں لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحدوں کے نزدیکی علاقوں کا دورہ کرکے کئی ریلیوں سے خطاب کیا۔ راجیہ سبھا میں ایک سوال کا تحریری جواب دیتے ہوئے وزیر دفاع ارون جیٹلی نے بتایا کہ گزشتہ تین برسوں کے دوران ریاست جموں کشمیر میں ملی ٹینسی مخالف کارروائیوں میں مجموعی طور49فوجی اہلکار اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔انہوں نے کہا کہ فوج نے دراندازی کے خلاف ایک خاص حکمت عملی اختیار کی ہے جس کو ریاستی حکومت کے اشتراک سے عملی جامہ پہنایا جاتا ہے۔ایک اور سوال کے جواب میں وزیر دفاع نے ایوان کو بتایا کہ گزشتہ دس برسوں کے دوران فوج کے لئے اسلحہ و آلات کی خریداری پر 4.95لاکھ کروڑ روپے کی رقم خرچ کی گئی ہے۔وزیر موصوف نے بتایا کہ رواں مالی برس کے لئے اس مد پر اب تک کی سب سے زیادہ رقم مختص کی گئی ہے۔اس دوران لوک سبھا میں ایک تحریری سوال کا جواب دیتے ہوئے امور داخلہ کے بھارتی وزیر مملکت کرن ریجی جو نے اس بات کا دعوی کیا کہ ممبئی حملوں کے سلسلے میں بھارت کو انتہائی مطلوب حافظ محمد سعید جموں کشمیر کے اس پار کنٹرول لائن اور بین الاقوامی سرحد کے نزدیکی علاقوں کا متواتر دورہ کرتے ہیں۔اس ضمن میں ان کہنا تھاماضی قریب میں جماعت الدعو کے سربراہ حافظ محمد سعید نے بین الاقوامی سرحد اور لائن آف کنٹرول پر کئی مقامات کا دورہ کیا ہے۔انہوں نے دعوی کیا کہ ان دوروں کے دوران حافظ محمد سعید نے کئی ریلیوں سے بھی خطاب کیا جو بھارت کے لئے انتہائی نازک ہے۔کرن ریجی جو کا مزید کہنا تھا کہ حافظ سعید ممبئی حملوں کا سرغنہ تھا اور وہ بھارت کو انتہائی مطلوب ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت ہند نے پاکستان سے بار ہا اس بات کی درخواست کی ہے کہ حافظ محمد سعید سمیت ممبئی حملوں میں ملوظ عناصر کے خلاف تیز رفتاری اور شفاف طریقے سے کارروائی عمل میں لائے۔وزیر مملکت نے کہا اس بات پر بھی زوردیا جاتا رہاہے کہ پاکستان جماعت الدعو اور لشکر طیبہ جیسی تنظیموں اور ان کے لیڈروں کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کرنے کے لئے موثر اقدامات کرے جن میں حافظ سعید بھی شامل ہے جو بقول ان کے بھارت کے خلاف تشدد اور دہشت گردی کا ایجنڈا چلارہا ہے۔nt/ah/wa